April 24, 2017
You can use WP menu builder to build menus

فرنچ پارلیمنٹ نے ملک میں مقیم تارکین وطن کو درپیش دفتری رکاوٹوں کو ختم کرنے کیلئے دو سے چار سال کےعرصہ پر مشتمل ریذیڈنس کارڈ اور تکنیکی لیبرکیلئے ٹیلنٹ پاسپورٹ جاری کرنے کا قانونی مسودہ منظور کر لیا ہے۔  فرنچ وزیر داخلہ برنارڈ کازینووا نے پارلیمنٹ میں اس مسودہ قانون پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ، اس قانون کو پیش کرنے کا بنیادی مقصد، فرانس میں قانونی طریقہ سے آنے والے تارکین وطن کو بہتر طریقہ سے سہولیات کی فراہمی ہے۔ نئے قانون کے تین اہم ترین نکات میں پہلا نقطہ ریذیڈنس کارڈ ہے۔ جو کہ فرانس میں ایک سال تک قانونی طریقہ سے مقیم رہنے والے تارکین وطن کو ایک سال مکمل ہونے پرجاری کیا جائے گا۔ ریذیڈنس کارڈ کی مدت4 سال ہو گی۔ ریذیڈنس کارڈ کو جاری کرنے کا مقصد تارکین وطن کو ہر سال ویزا کی تجدید کروانے کیلئے ایمیگریشن دفاتر کا چکر لگانے سے محفوظ کرنا ہے۔ دوسرا اہم ترین نقطہ۔ ٹیلنٹ پاسپورٹ کا اجراء ہے۔ جو کہ 4 سال کیلئے جاری کیا جائے گا۔ پاسپورٹ صرف ان تارکین وطن کو جاری کیا جائے گا۔ جو کہ بعض مخصوص تکنیکی صلاحیتوں کے حامل ہوں گے۔ جن میں آرٹسٹ۔ سائنسدان اور کھلاڑی وغیرہ شامل ہیں۔ قانون کا تیسرا اہم ترین نقطہ۔ اگر کسی غیر قانونی تارک وطن کو گرفتار کیا جائے گا تو اسے خصوصی مجسٹریٹ کے سامنے 48 گھنٹوں کے اندر اندر پیش کرنا ہو گا۔ اس سے قبل غیر قانونی تارکین وطن کو 5 دن کے اندراندر مجسٹریٹ کے سامنے پیش کرنا ہوتا تھا۔ تارکین وطن کے حقوق کے تحفظ کیلئے جدوجہد کرنے والی ایسوسی ایشنز اس سے قبل یہ اعتراض اٹھاتی رہی ہیں کہ، آدھے سے زیادہ ڈیپورٹ ہونے والے افراد کو مجسٹریٹ کے سامنے پیش کیے بغیر ڈیپورٹ کر دیا جاتا ہے۔ جس کے باعث یہ نہیں جانا جا سکتا ہےکہ، ڈیپورٹ کیا جانے والا تارک وطن ، ڈیپورٹ ہونے کے بعد جان کے خطرہ سے دوچار ہو سکتا ہے یا نہیں۔ سوشلسٹ حکومت کی جانب سے پیش کیے جانے والے قانون کےخلاف سابق صدر سرکوزی نے ریذیڈنس کارڈ کی مدت 3 سال کرنے، اور بیمار تارکین وطن کو یہ ریذیڈنس کارڈ جاری نہ کرنے کا مطالبہ پر مشتمل ترمیم ایوان میں پیش کی تھی۔ جسے حکمران سوشلسٹ پارٹی نے مسترد کر دیا۔ اپوزیشن کےمطابق اس قانون کے بعد فرانس میں تارکین وطن کی آمد بڑھ جائے گی۔ وہیں اپوزیشن نے اس قانون کے خلاف اعلان کیا ہے کہ اگر وہ 2017 کے انتخابات جیت گئے تو وہ اس قانون پر پارلیمنٹ میں دوبارہ ووٹنگ کروائے گی۔  یہ امر قابل ذکر ہے کہ فرانس میں ہر سال 2 لاکھ تارکین وطن کو فرانس میں رہنے کا اجازت نامہ جاری کیا جاتا ہے۔ جنہیں اس نئے قانون سے سہولت حاصل ہوگی۔ 

Comments are closed.

error: Content is protected !!