October 22, 2017
You can use WP menu builder to build menus

بس پریس۔کام۔ جرمنی کے شہر ہمبرگ کی حکومت کا دو سپینش زرعی کمپنیوں کے ساتھ عدالت سے باہر ہرجانہ ادائیگی کا معاہدہ طے پا گیا ہے۔ ان کمپنیوں کے پیدا کردہ زہریلے سپینش کھیروں کے باعث 2011 میں جرمنی میں 46 افراد جان کی بازی ہار گئے تھے۔ معاہدہ کے تحت ہمبرگ حکومت دونوں کمپنیوں کو فی کمپنی 4 سے 7 لاکھ یورو جرمانہ عائد کرے گی۔ جبکہ عدالتی اخراجات دونوں فریق نصف/نصف ادا کریں گے۔ جرمن اخبار بلد کے مطابق ہمبرگ حکومت کو متوفین کے ورثاء کو 22 لاکھ یورو بطور ہرجانہ ادا کرنے پڑے تھے۔ محکمہ صحت جرمنی کے حکام نے ان افراد کی موت کا ذمہ وار ان زرعی کمپنیوں کے پیدا کردہ سپینش کھیروں کو قرار دیا تھا۔ کئی ہفتوں کی تحقیقات کے بعد سپینش کھیروں کو اس الزام سے مبرا قرار دیتے ہوئے، مصر سے درآمد شدہ کم معیار کے سویا پر یہ الزام عائد کر دیا گیا۔ عدالت نے بھی سپینش کھیروں پر عائد الزام کو سچ ثابت کرنے کیلئے مہیا کئے گئے ثبوت کو ناکافی قرار دیا تھا۔ف۔ای ایف ای   

Comments are closed.

error: Content is protected !!